یوں ضدی ہیں تیری یادیں
جیسے بچے امیر لوگوں کے